حافظ محمد شبیر کا لوٹن کونسل چیمبر اور مئیر پارلر کا دورہ 

حافظ محمد شبیر کا لوٹن کونسل چیمبر اور مئیر پارلر کا دورہ 

حافظ محمد شبیر کا لوٹن کونسل چیمبر اور مئیر پارلر کا دورہ 

مئیر آف لوٹن اور پاکستانی ،کشمیری کونسلرز فورم ساؤتھ آف انگلیڈ کی سینٹرل ایگزیکیٹیو کمیٹی کے رُکن مئیر طاہر محمود ملک کی خصوصی دعوت پر کویت کی ممتاز سماجی ،کاروباری و روحانی شخصیت حافظ محمد شبیر کا لوٹن کونسل اور میئر پارلر کا دورہ۔ 


حافظ محمد شبیر  ،،،چئیرمین OPWC او پی ڈبلیو سی و ممبر اوورسیز پاکستانیز ایڈوائزری کونسل نعیم نقشبندی اور پروفیشنل فورم OPWC برطانیہ کے صدر انجنئیر فرخ جمیل کے ہمراہ جب لوٹن مئیر پارلر  پہنچے تو مئیر آف لوٹن طاہر محمود ملک۔ کونسلر راجہ وحید اکبر ۔مرکزی ترجمان OPWC اور او پی ڈبلیوسی علماء مشائخ فورم برطانیہ کے صدر پروفیسر مسعود اختر ہزاروی،،،،صدر OPWC بزنس فورم مجاہد حسین۔ او پی ڈبلیو سی کے مرکزی راہنما حسیب بٹ۔ انجنئیر احد سہیل۔ چوہدری تاج۔ شہزاد خان ۔اور ساجد یعقوب نے انکا پُر تپاک استقبال کیا۔ 

میئر طاہر محمود ملِک نے  لوٹن ٹاؤن کی ہسٹری اور تارکین وطن کو برطانیہ اور پاکستان میں درپیش کمیونٹی مسائل کے حوالے سے  تبادلہ خیال کیا۔ اور بتایا کہ لوٹن میں تقریباً پچاس ہزار پاکستانی و کشمیری کمیونٹی قیام پذیر ہے۔ اور لوٹن کونسل میں پاکستانیوں کو بڑی تعداد میں نمائیدگی حاصل ہے۔اور کونسلرز فورم کے قیام کا مقصد مل جُل کر مسائل کا حل تلاش کرنا اور مخلوق خُدا کی خدمت کرتے ہوئے کمیونٹی کیلئے آسانیاں پیدا کرناہے۔ 

 چئیرمین او پی ڈبلیو سی نے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ الحمدللہ پچھلے چھ دہائیوں سے برطانیہ میں تارکین وطن آباد ہیں  اور تقریباً 16 لاکھ تک تعداد پانچ چکی ہے۔  اب انکی تیسری و چوتھی نسل پروان چڑھ رہی ہے۔ اور گزشتہ چھ دہائیوں میں انگلینڈ میں اوورسیز پاکستانیوں نے ہر شعبہ ہائے زندگی میں کامیابیوں کے جھنڈے گاڑ دئے ہیں۔ 
جہاں لندن جیسے تاریخی مقام کا مئیر پاکستانی ہے تو وہاں وزیر داخلہ و خزانہ کے قلمدان میں پاکستانیوں کے پاس ۔۔اسی طرح 12 ممبر آف پارلئمنت۔ درجنوں ہاؤس آف لارڈز کے ممبران اور ٹاؤن مئیرز ،،،تقریباً 400 منتخب کونسلرز اور دیگر شعبہ ہائے زندگی میں ۔۔۔سول سروسز،،،ڈاکٹرز،،انجنئر ز،،،وکلاء،،،
بیرسٹرز ,,,اکاؤنٹینٹس۔ اور سر انور پرویز،،انیل مسرت جیسی  ممتاز کاروباری شخصیات،،،عامر خان جیسے ورلڈ چیمپئن باکسر ،،،الغرض ہر میدان میں خواتین سمیت تارکین وطن اپنی کامیابیوں کے جوہر دکھا رہے ہیں۔ 
برطانیہ ہائی کمیشن اور قونصلیٹس ہائی کمشنر نفیس زکریا کی قیادت میں کمیونٹی کیلئے آسانیاں پیدا کر رہے ہیں مگر ضرورت اس امر کی ہے کہ حکومت پاکستان ان تارکین وطن کے پاکستان میں لینڈ مافیا سمیت دیگر مسائل کا ترجیحی بنیادوں پر حل ممکن بنانے کیلئے اوورسیز کمیشن جیسے فُعال ادارے کشمیر ،گلگت سمیت ہر صوبے میں قائم کئے جائیں تاکہ کمیونٹی کو ریلیف ملے ،،،اور ادوار ں پر اوورسیز کمیونٹی کا اعتماد بحال ہو جس سے مایہ کاری کے فروغ کو تقویت ملے گی۔ 

حافظ محمد شبیر نے شرکاء کو کویت اور پڑوسی خلیجی ممالک میں کمیونٹی کو درپیش مسائل کے تدارک اور کمیونٹی کو ریلیف فراہم کرنے کے حوالے سے جو خدمات سر انجام دی ہیں اور اسکے علاوہ پاکستانی کلچر اور مصنوعات اور سرمایہ کاری کے حوالے سی کی جانیوالی کاوشیوں پر شرکاء  تقریب کے ساتھ تبادلہ خیال کیا۔ اور سیر و سیاحت کے فروغ کے حوالے سے اپنی تصنیف بھی مئیر آف لوٹن کو پیش کی۔ 

مئیر آف لوٹن طاہر محمود ملک نے حافظ محمد شبیر کی خلیجی ممالک بالخصوص کویت میں سماجی و بزنس کمیونٹی کیلئے خدمات اور سیروسیاحت کے فروغ کے حوالے سے انکی تخلیقی کاوشوں کو سراہتے ہوئے  تعریفی اسناد اور شیلڈ سے نوازا۔